ریاست کا پرچم 30 ستمبر کو صدر محمود عباس کے جنرل اسمبلی کے اجلاس میں خطاب کے موقع پر لہرایا جائے گا، فلسطینی مبصر۔ فوٹو: فائل

نیویارک: اقوام متحدہ کی عمارتوں کے سامنے فلسطین کا پرچم لہرانے کی قرارداد اسرائیل اور امریکا کی مخالفت کے باوجود کثرت رائے سے منظور ہو گئی ہے۔

اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی میں اقوام متحدہ کی عمارتوں کے باہر فلسطینی پرچم لہرانے کی قرارداد کے حق میں 119 ووٹ ڈالے گئے جب کہ امریکا اور اسرائیل سمیت 8 ممالک نے قرارداد کی مخالفت کی۔ سویڈن، فرانس، اٹلی اور اسپین سمیت 45 ممالک نے قرارداد کے حق میں ووٹ دیا جب کہ برطانیہ سمیت 45 ممالک نے ووٹنگ میں حصہ نہیں لیا۔

اقوام متحدہ کی عمارتوں کے باہر فلسطینی پرچم لہرانے سے متعلق قرارداد پر عمل درآمد کے لئے 20 روز کا وقت دیا گیا ہے۔

اقوام متحدہ میں فلسطینی مصبرین کا کہنا ہے کہ وہ اپنی ریاست کا پرچم 30 ستمبر کو صدر محمود عباس کے جنرل اسمبلی کے اجلاس میں خطاب کے موقع پر لہرائیں گے۔

واضح رہے کہ گذشتہ برس کئی ممالک نے فلسطین کو علیحدہ ریاست کے طور پر تسلیم کرنے کی حمایت کی تھی جب کہ حال ہی میں ویٹی کن نے بھی  فلسطین کو سرکاری سطح پر علیحدہ ریاست کے طور پر تسلیم کیا ہے۔

Note:

All the information is copied from www.express.pk/story/390828/

liferim.com has no credit on it or personal resources or information

so their is no responsibility of liferim.com for any incorrect or wrong information

connect to its original source for any claim or any complain

liferim.com just providing the current updates to its users to keep them update

Share it

Comments are closed.